آہ کو سمجھے ہو کیا دل سے اگر ہو جائے گی – قمرجلالوی

آہ کو سمجھے ہو کیا دل سے اگر ہو جائے گی

 

آہ کو سمجھے ہو کیا دل سے اگر ہو جائے گی

وہ تو وہ ان کے فرشتوں کو خبر ہو جائے گی

 

پوری کیا موسیٰ تمنا طور پر ہو جائے گی

تم اگر اوپر گئے نیچی نظر ہو جائے گی

 

کیا ان آہوں سے شب غم مختصر ہو جائے گی

یہ سحر ہونے کی باتیں ہیں سحر ہو جائے گی

 

آ تو جائیں گے وہ میری آہ پر تاثیر سے

محفل دشمن میں رسوائی مگر ہو جائے گی

 

کس سے پوچھیں گے وہ میرے رات کے مرنے کا حال

تو بھی اب خاموش اے شمع سحر ہو جائے گی

 

یہ بہت اچھا ہوا آئیں گے وہ پچھلے پہر

چاندنی بھی ختم جب تک اے قمر ہو جائے گی

مزید پڑھیں

admin

http://fruit-chat.com

میری موج میری سوچ

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *